عامر خان کی موویز ـــــ یا ــــ موٹیویٹیو ویز..دیسی منٹو

عامر خان کی موویز ـــــ یا ــــ موٹیویٹیو ویز

میرا جب بھی دل اداس ہوتا ہے تو میں بالی ووڈ کا خوبرو اداکار عامر خان کی موویز دیکھتا ہوں ایک تو میری طبیعت بہل جاتی ہے اور دوسرا انکے موویز سے موٹیویشن بھی مل جاتی ہے جوکہ بہت کم موویز میں دیکھنے کو ملتا ہے،

انھوں نے تقریبا ہر موضوع پر موویز بنائی ہے اور نہایت ہی باریک بینیوں سے چھوٹی سے چھوٹی چیز کو بھی ہائی لائیٹ کیا ہے جو کہ سراہنے کے قابل ہے دوہزرا سے پہلے اور دوہزار کے بعد عامر خان میں زمین و آسمان کا فرق ہے دوہزار سے پہلے عامر خان کی موویز پیار محبت کے موضوع پر مبنی ہوتی تھیں جوکہ ایک روایتی اداکاروں کی طرح پرفارم کرنے کا موقع ملتا تھا کبھی فلمیں ھٹ ہوتی تو کبھی پٹ جاتی تھیں، لیکن دوہزار کے بعد جب سے انھوں نے موویز خود سے پروڈیوس کرنا شروع کیا ہے تو انکے ہنر کا ڈنکا چہارسو بجنے لگا ہے، اور جناب بالی ووڈ پر بےتاج بادشاہ کی طرح راج کرنے لگا ہے،

سلمان خان اور شاہ رخ جوکہ اپنے آپ میں ایک برانڈ ہیں انکا سٹارڈم اتنا ہے کہ انکا نام اگر کسی فلم کیساتھ جڑ جائے تو ریلیز ہونے سے پہلے ہی وہ فلم سوپر ھٹ ہوتی ہے جس کیلئے انھیں زیادہ محنت اور تردد کی ضرورت بھی نہیں پڑتی، سلمان خان تو بالی ووڈ کا بھائی جان ہے موجودہ دور میں سب سے زیادہ کمائی سلمان خان کی موویز ہی کرتی ہیں مگر انکے موویز اب بھی نائنٹی دور کی طرح موویز ہوتیں ہیں کوئی خاص تبدیلی ان میں نہیں آئی ہیں کالر پر عینک لگا کر سلو موشنز میں آگے بڑھنا لات رسید کرکے دور پھینکا انکا خاصہ ہے اور تو اور انکے چہرے کے تاثرات سے نہیں لگتا کہ بھائی جان غصے میں، خوش ہے یا دکھی ہے؟ مطلب یہ کہ انکی کامیابی ایکٹنگ کی وجہ سے نہیں بلکہ سٹارڈم کی وجہ سے ہیں کیونکہ انکے موویز کا موضوع اتنا بوگس ہوتا ہے کہ بندہ اس سے کچھ بھی اخذ نہیں کرسکتا ہاں انٹرٹینمنٹ سے بھرپور ہوتی ہے،

عامر خان کی خوبی یہ ہے کہ وہ موویز میں نئی نئی چیزیں متعارف کرواتا ہیں ” لگان ” میں انھوں نے ایک مزدور کاشتکار کا کردار ادا کیا جس میں آزادئ ہند سے پہلے انگریزوں کی بدعنوانیوں کو ہائی لائیٹ کیا ہے، ” سیکریٹ سپر سٹار ” میں انھوں نے گائیکی سے محبت کرنے والی ایک لڑکی کو دیکھایا ہے کہ کس طرح ایک لڑکی اپنے کنزرویٹیو باپ کے ہوتے ہوئے اپنی خواہش کی تکمیل پورا کرتی ہے، ” پی کے” میں انھوں نے ہندؤں کی تواہمات کو دیکھایا ہے مذہب کے بیوپاروں کا اصل چہرہ سامنے لایا جس پر ہندؤ کمیونٹی نے شدید احتجاج بھی کیا تھا مگر فلم پوری دنیا میں پسند کی گئی اور آل ٹائم بلاک بسٹر کا ٹائیٹل بھی جیت لیا، ” تارے زمین پر” میں ایک بیماری پر فوکس ہے اور ساری اسٹوری اس کے ارد گرد منڈلا رہی ہے جوکہ قابل تعریف ہے،

الغرض عامر خان نے پیسہ ضرور کمایا ہے مگر انھوں نے معاشرے کیلئے سیکھنے کو بہت چیزیں دی ہیں اگر کوئی صحیح معنوں میں زندگی کے اصول جاننا چاہتا ہو تو وہ عامر خان کی موویز کو توجہ کیساتھ دیکھیں آپ کو آگے بڑھنے کیلئے بہت سے راستے مل جائینگی مگر آفسوس اس بات کا ہے کہ ہماری نوجوان نسل فلموں سے صرف پیار محبت سیکس اور نت نئے سٹائلز سیکھتے ہیں اور جن چیزوں سے ہمیں آگے بڑھنے میں مدد ملتی ہے اسکو اگنور کرتے ہیں ـــــ!

والسلام ــــــ،

#دیسی_منٹو

اپنا تبصرہ بھیجیں